رجب کے مہینے میں روزانہ یہ تسبیح پڑھ کر سویا کریں سورج نکلنے سے پہلے گھر میں بے حساب رزق آجائے گا۔

حجۃ الاسلام حضرت امام سیدنا امام غزالی ؒ مکاشفۃ القلوب میں فرماتے ہیں کہ رجب دراصل ترجیب سے مشتق ہے اسکا معنی ہے تعظیم کرنا اس کو سب سے تیز بہاؤ بھی کہتے ہیں اس لئے ماہ مبارک میں توبہ کرنے والون پر رحمت کا بہاؤ تیز ہوجاتا ہے

اور عبادت کرنے والوں پر قبولیت کے انوار کا فیضان ہوتا ہے اس مہینہ جنگ و جدل کی آواز بالکل سنائی نہیں دیتی اسے رجب بھی کہاجاتا ہے کہ جنت کے ایک نہر کا نام رجب ہے جس کا پانی دودھ سے زیادہ سفید شہد سے زیادہ میٹھا اور برف سے زیادہ ٹھنڈا ہے اس نہر سے وہی پانی پئے گا جو رجب کے ماہ میں روزے رکھے گا۔بصرہ میں ایک نیک خاتون رہا کرتی تھیں جب ان کی وفات کا وقت قریب آیا تو اس نے اپنے بیٹے کو وصیت کی کہ مجھے اس کپڑے کا کفن پہنانا جسے پہن کر میں رجب میں عبادت کیا کرتی تھی ۔بعد ازاں انتقال اس کے بیٹے نے کسی اور کپڑے میں دفنا دیا جب قبرستان سے گھر آیا تو یہ دیکھ کر

اس کی حیرت کی انتہاء نہ رہی کہ اس کی ماں کا کفن گھر میں موجود تھا جب گھبرا کر اس نے ماں کی وصیت کردہ کپڑے تلاش کئے تو اپنی جگہ سے غائب تھے اتنے میں غیب سے آواز آئی اپنا کفن واپس لے لو ہم نے اس کو اس کے کفن میں کفنایا ہے جس کی اس نے وصیت کی ہے جو رجب کے روزے رکھتا ہے ہم اس کو اس کی قبر میں غمگین نہیں رہنے دیتے ۔رجب المرجب کی بڑی فضیلت ہے اگر آپ اس ماہ عبادت کرتے ہیں تو اللہ اس کا ثواب بہت زیادہ عطافرماتا ہے ۔ یہ بیج بونے کا مہینہ ہے ۔علامہ صفویؒ فرماتے ہیں رجب بیج بونے کا شعبان آبپاشی کا اور رمضان المبارک فصل کاٹنے کا مہینہ ہے لہٰذا جو رجب میں عبادت کا بیج نہیں بوتا اور شعبان میں آنسوؤں سے سیراب نہیں کرتا وہ رمضان میں فصل رحمت کیسے کاٹ سکتا ہے۔شیخ نے مصباح میں فرمایا ہے کہ معلٰی بن خنیس نے امام جعفرصادق (ع)سے روایت کی ہے۔ آپ(ع) نے فرمایا کہ ماہ رجب میں یہ دعا پڑھا کرو:اے معبود میں تجھ سے سوال کرتا ہوں

کہ مجھے شکر گزاروں کا صبر ڈرنے والوں کا عمل اور عبادت گزاروں کا یقین عطافرما اے معبود تو بلند و بزرگ ہے اور میں تیرا حاجت مند اور بے مال ومنال بندہ ہوں تو بے حاجت اور تعریف والا ہے اور میں تیراپست تر بندہ ہوں اے معبود محمد اور انکی آل(ع) پر رحمت نازل فرما اور میری محتاجی پر اپنی تونگری سے میری نادانی پر اپنی ملائمت و بردباری سے اور اپنی قوت سے میری کمزوری پر احسان فرما اے قوت والے اسے زبردست اے معبود محمد اورانکی آل(ع) پر رحمت نازل فرما جو پسندیدہ وصی اور جانشین ہیں اور دنیا و آخرت کے اہم معاملوں میں میری کفایت فرما اے سب سے زیادہ رحم کرنے والے۔اللہ ہم سب کا حامی وناصر ہو۔آمین

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *