صرف چند بار یہ کلمات پڑھ لیں ساری زندگی کے تمام گناہ معاف ایسے محبوب الفاظ جن کو پڑھتے ہی سارے مسائل فوری ختم

امام اعظم ابو حنیفہ ؒ کی گریاں زاری اور معافی مانگنے کا عجب معمول تھا۔ طباءتابعین کےدو ر کے ایک بزرگ بیان کرتے ہیں کہ میں کوفہ کی جامع مسجد اس ارادے سے رات بسر کرنے آیا کہ دیکھوں کہ امام اعظم حنیفہ ؒ کی شب بیداری کیسے ہوتی ہے

۔ وہ فرماتے ہیں کہ اللہ کی قسم میں نےاپنی آنکھوں سے دیکھا کہ نماز عشاء پڑھنے کے بعد امام ابو حنیفہ ؒ گھر گئے ۔ دن کو عالمانہ لباس پہناہوا تھا تبدیل کرکے اللہ کے حضور پیش ہونے کے لیے غلامانہ لباس پہن آئے اور مسجد کے کونے میں کھڑے ہوگئے۔

اب ساری رات اپنی داڑھی کھینچتے رہے اور عرض کرتے رہے کہ مولا ابو حنیفہ تیر ا مجر م۔ اسے معاف کردے ۔ حضرت امام ابوحنیفہ ؒ کے بارے میں یہ بھی منقول ہے کہ وہ رو رو کر بے ہوش ہوجایا کرتے تھے۔ اور جب ہوش آتا تو عرض کرتے مولا! کہ قیامت کے دن امام ابو حنیفہ ؒ بخشا گیا تو بڑے تعجت کی بات ہے۔ چنانچہ آپ بھی دو سو معافی ،مغفرت ، نصرت اور رحمت کے لیے یہ دعا کے الفاظ زبانی یاد کرلیجیے۔ یہ دعا کے الفاظ قرآن پاک کی سورت البقر ہ کی آیت نمبر دو سو چھیاسی میں موجود ہیں۔ کیونکہ تو بہ اور استغفار کی فضیلت یہ ہے کہ اللہ پاک تائب کے لیے جنت کے آٹھ دروازے کھولنے کا حکم فرماتے ہیں۔ آ پ بھی اس قرآنی دعاکو اپنی دعاؤں میں شامل کر لیجیے۔آپ اس کو نماز میں بھی پڑھ سکتے ہیں۔ اور صبح وشام کے وظائف اوراق میں بھی شامل کرسکتے ہیں۔

اور اسی سال کی عمر میں دو شعبان المعظم ڈیڑھ سو پچاس ہجر ی میں وفات پائی ۔ اور آج بھی بغداد شریف میں آپ کا مزار فائض الانوار مرجع خلائق ہے ۔ ائمہ اربعہ یعنی چاروں امام برحق ہیں۔ اور ان چاروں کے خوش عقیدہ مقلدین آپس میں بھائی بھائی ہیں ۔ ان میں آپس میں تعصب کی کوئی وجہ نہیں ۔ سیدنا امام ابو اعظم ؒ چاروں اماموں میں بلند مرتبہ ہیں۔ اس کی ایک وجہ یہ بھی ہے کہ ان چاروں میں صرف آپ تابعی ہیں۔ “تابعی ” اس کو کہتے ہیں : ” جس نے ایمان کی حالت میں کسی صحابی رضی اللہ عنہ سے ملاقات کی ہو اور ایمان پراس کا خاتمہ ہوا ہو”۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *